کینیڈا کے ایران مخالف اقدام سے اس کو ہی نقصان پہنچے گا: ظریف

پریٹوریا، 14 جون، ارنا - ایرانی وزیر خارجہ نے کینیڈین پارلیمنٹ کی ایران مخالف قرارداد پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ ایسی پالیسی سے خود کینیڈا کو ہی نقصان پہنچے گا.

یہ بات 'محمد جواد ظریف' نے دورہ جنوبی افریقہ کے موقع پر صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.

انہوں نے کینیڈین پارلیمنٹ کے اس اقدام پر تبصرہ کرتے ہوئے مزید کہا کہ بدقسمتی سے کینیڈا میں اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف غلط تصور اور وہم و گمان تھے اور اب بھی ہیں.

ظریف نے کہا کہ اس کے باوجود کہ کینیڈا میں نئی حکومت برسر اقتدار آئی مگر انتہاپسند حلقوں کی جانب سے سیاسی دباؤ کا سلسلہ ختم نہ ہوسکا.

انہوں نے مزید کہا کہ ایسی پالیسیوں سے کینیڈا کو ہی نقصان ہوگا اور اس عالمی امن و سلامتی کے لئے مدد نہیں ملے گی لہذا مغربی ممالک کو چاہئے کہ ایران کی مستقل پالیسی کو دیکھ کر تعمیری فیصلہ کریں.

محمد جواد ظریف نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے دہشتگردی کے خلاف جنگ میں ہمیشہ غیرامتیازی پالیسی اپنائی ہے مگر بدقسمتی سے مغربی ممالک بجائے اس کے کہ ہماری کاوشوں کا اعتراف کریں وہ خود مغربی ممالک کےجرائم اور خطے میں سنگین اقدامات پر خاموش ہیں.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@



برچسب ها

سیاسی